قومی علمی کمیشن
حکومت ہند
  


نئی
توانائ پورٹل ھنروستان کا
پانی کا پورٹل ھنروستان کا
نئی سفارشات

  زبان
  English
  हिन्दी
  বাংলা
  മലയാളം
  অসমীয়া
  ಕನ್ನಡ
  தமிழ்
  नेपाली
  মণিপুরী
  ଓଡ଼ିଆ
  ગુજરાતી
ہماراتعارف | اغراض و مقاصد

اغراض و مقاصد

13 جون 2005 کے سرکاری نوٹیفکیشن کے مطابق قومی علمی کمیشن کے اغراض و مقاصد مندرجہ ذیل ہیں

  • 21 ویں صدی کے علمی چیلنجوں کا مقابلہ کرنے کے لۓ تعلیمی نظام میں بہتری اور علم کے میدان میں ہندوستان کی مسابقہ کی صلاحیت میں اضافہ کرنا-

  • سائنس و تکنالوجی کی تجربہ گاہوں میں علم کی تخلقیق کو فروغ دینا-

  • دانشورانہ املاک کے حقوق میں مصروف اداروں کے انتظام کو بہتر بنانا

  • زراعت اور صنعت میں علم کے اطلاق کو فروغ دینا

  • حکومت کو موّثر، شفّاف، عوام کی تئیں زیادہ ذمہ دار اور خدمتگار بنانے میں علمی صلاحیتوں کو فروغ دینا اور عوام کے زیادہ سے زیادہ فائدے کےلۓ علم کی شراکت کو فروغ دینا-


مقاصد:

قومی علمی کمیشن کا عین مقصد ایک ذی علم فعال سوسائٹی کا قیام ہے- اس کے حصول کے لۓ ضروری ہے کہ موجودہ علمی نظام میںتبدیلیاں کرکے اس کو بہتر بنایا جائے اور علم کی نئی اشکال کی تخلیق کے لۓ مواقع فراہم کیے جائیں-

ان مقاصد کے حصول کے لۓ سماج کے تمام طبقوں کی شرکت اور سماج کے تمام طبقوں تک علم کی مساوی پہنچ دو اہم پہلوں ہیں-

علمی کمیشن کی کوشش ہے کہ مذکورہ بالا پہلوؤں کو مدّنظر رکھتے ہوئے مناسب ادارتی فریم ورک قائم کۓجائین ۔

  • تعلیمی نظام کو مستحکم کرنا، گھریلو تخلیق اور اختراع کو فروغ دینا، صحت، زراعت اور صنعت جیسے شعبوں میں علم کے اطلاق میں مدد دینا

  • بہتر گورننس اور کنکٹوٹی کے پیش نظر معلومات اور مواصلاتی تکنالوجی کی فراہمی

  • عالمی سطح پر علمی نظاموں کے مابین تبادلہ خیال اور رابطہ کے لۓ طریقہ کار وضع کرنا-