قومی علمی کمیشن
حکومت ہند
  


نئی
توانائ پورٹل ھنروستان کا
پانی کا پورٹل ھنروستان کا
نئی سفارشات

  زبان
  English
  हिन्दी
  বাংলা
  മലയാളം
  অসমীয়া
  ಕನ್ನಡ
  தமிழ்
  नेपाली
  মণিপুরী
  ଓଡ଼ିଆ
  ગુજરાતી
ہمارا تعارف | تنظیم

تنظیم


قومی علمی کمیشن میں چئیرمین سمیت چھ اراکین ہیں- تمام اراکین یہاں پارٹ ٹائم پر کام کرتے ہیں اور اس کے لۓ کوئی مشاہیرہ قبول نہیں کرتے

اراکین کے کام میں مدد کے لۓ ایک ایگزیکیوٹو ڈائریکٹر کی سربراہی میں ایک چھوٹا سا تکنیکی عملہ تعینات ہے- یہ ایگزیکیوٹو ڈائریکٹر بھی حکومت کی طرف سے قومی علمی کمیشن کو دیا گیا ہے- کمیشن کو اپنے کام کے لۓ ماہرین کو بھی تعینات کرنے کا اختیار ہے-

منصوبہ بندی و بجٹ اور پارلیمنٹ سے متعلق جوابات کے لۓ منصوبہ بندی کمیشن قومی علمی کمیشن کی نوڈل ایجنسی ہے-

قومی علمی کمیشن کا طریقہ کار درجہ ذیل ہے
  1. اہم توجہ طلب شعبوں کی نشاندہی
  2. متنّوع متعلقہ افراد کی نشاندہی اور علاقے کے اہم مسائل کی جانکاری
  3. ماہرین اور خصوصی علم رکھنے والے افراد پر مبنی ورکنگ گروپ کی تشکیل، ورکشاپوں کا اہتممام متعلقہ افراد کے ساتھ رسمی اور غیر رسمی طور پر صلاح و مشورہ-
  4. متعلقہ وزارتوں اور منصوبہ بندی کمیشن کے ساتھ مشاورات-
  5. قومی علمی کمیشن کے چئیرمین کی طرف سے وزیراعظم کو سفارشات پیش کرنا۔ یہ سفارشات ایک خط کی شکل میں ہوتی ہیں۔ سفارشات کو حتمی شکل دینے کی غرض سے قومی علمی کمیشن میں مشاورات
  6. وزیر اعظم کو لکھے گئے خط میں کلیدی سفارشات،اوّلین اقدامات، مالی پیچیدگیاں وغیرہ، کا ذکر ہو گا اور اسکی حمایت میں متعلقہ توجیہی دستاویزات پیش کی جائیں گی-
  7. قومی علمی کمیشن کی سفارشات کی ریاستی حکومتوں، شہری سوسائٹی اور دیگر متعلقہ افراد کو جو قومی علمی کمیشن کی ویب سائٹ کا استعمال کررہے ہیں وسیع پیمانے پر ترسیل
  8. وزیر اعظم کے دفتر کے ذریعے سفارشات کے اطلاق کا آغاز-
  9. متعلقہ افراد کے خیالات پر منحصر سفارشات کو حتمی شکل دینا اور تجاویز کے اطلاق کے سلسلے میں رابطہ قائم کرنا اور ان پر عمل کرنا-